انسانوں کی دو ست جنگلی بلی۔

0
29

انسانوں کی دو ست جنگلی بلی۔

بلی ایک پالتو جانور ہے جسے عام طور انسان بہت پسند کرتے ہیں اس کے لیے بلی کو اپنے گھر میں پالا جاتا ہے ، اور اپنا دوست بنا یا جا تا ہے
ایک جامع تفصیل کے دوران اس بات کا پتہ چلا ہے کہ انسا نوں نے بلیوں کو خود گھر میں قید کر کے پالتو نہیں بنایا بلکہ بلیاں خود انسان کی رقیب بنی ہیں خود ان کی دوست بنی ہیں
انسان کو خود کے قریب لانے والی مخلوق ہے
با لکل اسی طرح ہی جیسے زرافے کی گردن اونچے نیچے درختوں کے پتے کھانے سے ہو گئی اور اب ہمیں زرافے کی موجودہ نسل ہی نظر آتی ہے حالا نکہ پہلے ایسا نہیں تھا
مختلف اقسام کی بلیوں پر تحقیق کے دوران مختلف قسم کی ریسرچ سامنے آئی ان کا کہنا تھا کہ بلیاں پالنے کا رواج عرصہ قدیم سے آ رہا ہے جب کہ ایسا نہیں تھا کہ بلیوں کو قید کر کے ان کو گھر وں میں رہنے پر مجبور کیا گیا
بلکہ بلیاں خود ہی انسان کے پاس گئیں اور ان کے ساتھ رہنے لگیں
بلیوں پر کی گئی تحقیق کے دوران پتہ چلا کہ انسان اور بلی کی عادتوں میں کچھ زیادہ فرق نہیں ہے بلکہ دونوں کی عادتیں ایک جیسی ہی ہیں
بلیاں گھر میں دوسرے اور پالتو جانور برداشت نہیں کرتیں ان کی یہ خواہش ہوتی ہے کہ تمام تر توجہ کا مر کز وہ ہی رہیں اور اس کے ساتھ ساتھ اگر تھوڑی سی محنت کی جائے تو بلیوں کی اس عادت کو ختم بھی کیا جا سکتا ہے
تاہم بلیاں انسان کی دکھ سکھ اور غم کی ساتھی ہیں یہ انسانوں کے ساتھ آرام دہ محسوس کرتیں ہیں

مزید پڑھیے:
مزید تفصیلات کے لیے Youtubeکے چینل کو سبسکرائب کریں 

جواب دیجئے